robot 72

چہرے پر انسانی تاثرات اور جذبات ظاہر کرنے والا روبوٹ بچہ

جاپان: جامعات اورمیڈیکل کالجوں میں انسانی جذبات اوراحساسات ظاہر کرنے والی تصاویراورویڈیوزکوتدریس میں استعمال کیا جاتا ہے۔ لیکن اب ایک روبوٹ بھی یہ تمام جذبات بہت اچھی طرح اپنے چہرے پر نمایاں کرسکتا ہے۔

لیکن ویڈیوز اور تصاویر کی اپنی خوبیاں اور خامیاں ہوسکتی ہیں۔ اسی لیے اب جاپانی روبوٹ ساز کمپنی رائکن نے نکولا نامی روبوٹ بچے کا سر بنایا ہے جس کے چہرے پر 35 بادی (نیومیٹک) ایکچوایٹرنصب ہیں اور وہ چھ طرح کے تاثرات اپنےچہرے پرظاہرکرتا ہے۔ یہ تعلیمی اداروں میں بالخٓصوص نفسیاتی تدریس میں ایک اہم کردار ادا کرسکتا ہے۔

اس کا پورا نام ’نکولا دی اینڈروئڈ چائلڈ‘ ہے اور وہ اپنے چہرے پر جو بھی تاثر دکھاتا ہے اس میں کوئی کمی نہیں ہوتی جسے تمام افراد پہچان سکتے ہیں۔ یہ روبوٹ اپنے چہرے پر خوشی، غم، خوف، غصے، حیرت، اور مضحکہ خیزتاثرات ظاہر کرتا ہے۔ صرف آنکھوں اور سر پر بل کے لیے اس میں چھ ایکچوایٹرلگائے گئے ہیں۔
ہرایکچوایٹرپر فیشل ایکشن کوڈنگ سسٹم ( ایف اے سی ایس) کی بنا پر روبوٹ کے چہرے پر جو ایکچوایٹرلگائے گئے ہیں وہ عین حیاتیاتی ’فیشل ایکشن یونٹس‘ کی طرح کام کرتے ہیں۔ یہ احساسات ہمارے چہرے پر مختلف عضلات اور پٹھوں (مسلز) کیوجہ سے ہی ممکن ہوتا ہے۔ ہوا کی قوت سے چلنے والے ایکچوایٹر بہت ہی مؤثر انداز میں چہرے پر جذبات سجاتے ہیں۔
ماہرین نے نکولا کو بہت قریب سے دیکھا ہے اور انسانی جذبات دھارنے کے عمل کو بہترین قرار دیا ہے۔

ویب ڈیسک
یہ بھی پڑھیں: -   طالبان کے خوف سے اداکارہ عرشی خان کا افغان کرکٹر سے شادی نہ کرنے کا عندیہ

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں