Columns of Ansar Abbasi 116

آپ کی امداد کے منتظر فلاحی ادارہ

سال 2020کی طرح 2021بھی ابھی تک کورونا کا شکار ہی رہا ہے۔ ساری دنیا پریشان ہے اور پاکستان کی بات کی جائے تو حالات اِن دنوں بہت زیادہ تشویش ناک ہیں۔ کورونا کے باعث لوگوں کے کاروبار متاثر ہوئے، لاکھوں کی نوکریاں چلیں گئیں، آمدنیاں کم ہو گئیں۔ جب ملکی معیشت کا بُرا حال ہوا تو اُس سے عام لوگ بھی متاثر ہوئے، اُن کو پیسے کی کمی کا سامنا کرنا پڑا جس کا اثر فلاحی اداروں بشمول اسکولوں، اسپتالوں اور یتیم خانوں کے ساتھ ساتھ مساجد و مدارس کی امداد پر بھی پڑا۔ اِن حالات کے باوجود بہت سے فلاحی ادارے جس فعال انداز میں کام کر رہے ہیں، اُنہیں دیکھ کر بہت خوشی ہوتی ہے۔ جماعت اسلامی اور اُس کا فلاحی ادارہ الخدمت فاؤنڈیشن، اخوت فاؤنڈیشن، شوکت خانم، ایدھی، سیلانی، سویٹ ہوم اور دوسرے کئی ادارے اِن حالات کے باوجود بہت زبردست کام کر رہے ہیں۔ اِن بڑے فلاحی اداروں کی فنڈنگ پر بھی کورونا کی وجہ سے ضرور منفی اثرات پڑے ہوں گے لیکن چھوٹے اور عام یتیم خانوں، مدرسوں، فلاحی طبی مراکز اور انسانیت کی خدمت کے لئے بنائے گئے دوسرے اداروں کو زیادہ مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ اِن حالات میں صاحبِ استطاعت افراد پر ہمارا دین یہ ذمہ داری عائد کرتا ہے کہ وہ غربا، مساکین اور بےآسرا لوگوں کی مدد کے لئے زکوٰۃ و صدقات دیں، ایسا کرنے والوں کے لئے نہ صرف آخرت میں بڑے اجر کا وعدہ ہے بلکہ دنیا میں بھی اُن کے مال میں برکت ہوتی ہے اور یہ عمل زندگی میں آنے والے مصائب اور تکالیف سے تحفظ کا بھی ذریعہ بنتا ہے، جس کی ہم سب کو اس وقت اشد ضرورت ہے۔

یہ بھی پڑھیں: -   یہ خود بھی ذمے دار ہیں

سب سے پہلے اپنے قریبی رشتہ داروں، جاننے والوں، ساتھ کام کرنے والوں اور ملازموں وغیرہ میں موجود مستحق افراد آپ کی مدد کے حقدار ہیں، غربا و مساکین کو کھانا کھلائیں،مریضوں کا علاج اور یتیموں کے سر پر ہاتھ رکھیں، اُن کی تعلیم و تربیت میں حصہ ڈالیں، پانی کی فراہمی، مسجد و مدرسہ کی تعمیر جیسے دوسرے بہت سے صدقۂ جاریہ کے کاموں میں اپنا حصہ ڈالیں۔ رمضان المبارک کے پاک و بابرکت مہینے میں صدقہ، زکوٰۃ اور خیرات دینے کا اجر بہت زیادہ ہے، اس لئے عموماً لوگ اسی مہینے میں اپنی زکوٰۃ، صدقہ اور خیرات نکالتے ہیں۔

جہاں یہ ضروری ہے کہ ہم الخدمت فاؤنڈیشن، اخوت فاؤنڈیشن، ایدھی، سیلانی، شوکت خانم، سویٹ ہوم وغیرہ جیسے بڑے فلاحی اداروں کے ساتھ تعاون کریں وہاں یہ بھی لازم ہے کہ ملک بھر میں پھیلے اپنے آس پاس انسانیت کی فلاح کے چھوٹے پروجیکٹس کا بھی خیال رکھیں جن کا تعارف عام نہیں ہوتا۔

منو بھائی مرحوم کے حوالے سے جانی جانے والی سندس فاؤنڈیشن جو تھیلے سیما اور ہیموفیلیا کے مرض میں مبتلا بچوں کا فری علاج کرتی ہے، ایک جانا پہچانا فلاحی ادارہ ہے لیکن گزشتہ سال اسی فاؤنڈیشن سے منسلک ہمارے ایک صحافی دوست کا کہنا تھا کہ اس ادارہ کو بھی اپنا کام جاری رکھنے کے لئے امداد کی اشد ضرورت ہے۔ میری قارئین کرام سے گزارش ہے کہ جن کو اللہ نے توفیق دی ہے، وہ سندس فائونڈیشن کی کھل کر امداد کریں۔

پچھلے دو تین سال سے میں اپنے کالم کے ذریعے ڈاکٹر خلیل الرحمٰن جو خود نیفرالوجسٹ ہیں اور کافی عرصہ سعودی عرب میں رہنے کے بعد اب اسلام آباد میں رہائش پذیر ہیں، کی تنظیم کے لئے بھی امداد کی درخواست کر رہا ہوں۔ ڈاکٹر صاحب اور اُن کے ساتھیوں نے جدہ میں 2005کے زلزلہ کے بعد پاکستانی کمیونٹی کی مدد کے لئے وہاں ایک پاکستان ویلفیئر سوسائٹی قائم کی تھی۔ ڈاکٹر صاحب کے آئیڈیا پر اس سوسائٹی نے ایبٹ آباد حویلیاں میں ایک کڈنی سنٹر بنانے کا فیصلہ کیا تاکہ غریب شہریوں کو مفت ڈائلیسز کی سہولت فراہم کی جا سکے۔ 2012میں اس پروجیکٹ پر کام شروع ہوا اور 2015میں پاکستان کڈنی سنٹر ایبٹ آباد کی بلڈنگ مکمل ہوئی جہاں اس وقت پندرہ ڈائلیسز مشینوں کیساتھ ساتھ، لیبارٹری اور فارمیسی بھی قائم ہے۔ ڈاکٹر صاحب کے مطابق یہاں تقریباً 70فیصد مریضوں کا مفت ڈائلیسز کیا جاتا ہے۔ اس سنٹر نے موبائل یونٹ کا بھی آغاز کیا ہے جو دیہی علاقوں میں جاکر لوگوں کی اسکریننگ کرکے کڈنی کے مرض کی تشخیص اور اسٹیج کا تعین کرنے کیساتھ ساتھ متعلقہ بیماریوں کا بھی پتا لگاتا ہے۔ اِس کڈنی سنٹر کی توسیع کرکے اب 50بستروں کا ایک اسپتال بھی بنایا جا رہا ہے۔ ڈاکٹر صاحب ہر سال سعودی عرب فنڈ ریزنگ کے لئے جاتے تھے لیکن کورونا کی وجہ سے نہ اِس سال وہ سعودی عرب جا سکے اور نہ ہی گزشتہ سال گئے جس کی وجہ سے اُن کے ادارہ کو شدید مالی مشکلات کا سامنا رہا۔ ایسے افراد جو ڈاکٹر صاحب کے ادارے کی مدد کرنا چاہیں، وہ ان سے موبائل نمبر 03005598569پر رابطہ کر سکتے ہیں۔ اپنا اطمینان کر لیں اور مطمئن ہونے پر اگر مدد کرنا چاہیں تو پاکستان ویلفیئر سوسائٹی ٹرسٹ جس کے زیر نگرانی یہ کڈنی سنٹر چلایا جا رہا ہے، کا اکائونٹ نمبر 0010019963110010ہے۔

یہ بھی پڑھیں: -   ایک سرکاری شودر لڑکی اور ہائی کورٹ کے فیصلے کی اوقات

Swift code: ABPAKKISL, Allied Bank of Pakistan, G-10 Markaz Branch (0750) Islamabad.

اسی طرح اسلام آباد کے علاقے گولڑہ میں یتیم بچیوں کے لئے قائم ’’ہمارا گھر‘‘ بھی مخیر حضرات کی امداد کا منتظر ہے۔ بےسہارا اور یتیم بچیوں کی دیکھ بھال کے لئے قائم ’’ہمارا گھر‘‘ کے منتظم طارق ستی اور اُن کی اہلیہ نے 2005کے زلزلہ کے بعد بچ جانے والی تین یتیم بچیوں کو اپنے گھر میں رکھنے کا فیصلہ کیا۔ بعد میں ایسی اور بھی یتیم اور بےسہارا بچیاں اُن کے پاس آ گئیں کیونکہ اُن کا خیال رکھنے والا کوئی نہ تھا۔ جب بچیاں زیادہ ہونے لگیں تو علاقہ میں ایک گھر کرائے پر لے کر ’’اپنا گھر‘‘ بنا دیا گیا اور اب طارق صاحب اور اُن کی اہلیہ ماشاء اللہ اسّی یتیم بچیوں کی دیکھ بھال کر رہے ہیں۔ امداد دینے یا اپنی تسلی کے لئے طارق ستی صاحب سے اُن کے موبائل نمبر 03217928888پر رابطہ کر لیں۔ ہمارا گھر ویلفیئر ٹرسٹ کا اکائونٹ نمبر درج ذیل ہے۔

#0010078692110019, Branch code 1055, IBAN# PK15ABPA0010078692110019, Allied Bank Ltd D-12 Markaz, Islamabad.

Columns of Ansar Abbasi
انصار عباسی

کس سے منصفی چاہیں

کالم نگار کے مزید کالمز پڑھنے کے لیے یہاں کلک کریں

کالم نگار کے نام کے ساتھ ایس ایم ایس اور واٹس ایپ رائے دیں 00923004647998

یہ بھی پڑھیں: -   کتاب سے مخطوطے تک!

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں